پردیش میں عوام بنا چکی تبدیلی کا دماغ: خواب لڑکی

دہرادون. بی جے پی کے رہنما اور مشہور فلم اداکارہ هےمامالني نے کہا ہے کہ کانگریس نے ملک و پردیش کو لوٹنے کا کام کیا ہے اور اتراکھنڈ کے عوام پردیش میں مکمل تبدیلی کا من بنا چکی ہے اور یقینی طور سے ریاست میں اگلی حکومت بی جے پی کی ہی ہوگی. انہوں نے وزیر اعظم کی طرف نوٹبدي کو بہتر قدم بتایا. یہاں دھرنا مقام پر راجپر روڈ اسمبلی حلقہ سے بی جے پی امیدوار كھجانداس کی حمایت میں منعقد جنوری اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے خواب لڑکی هےمامالني نے کہا ہے کہ ریاست کی کانگریس حکومت میں وسیع سطح پر بدعنوانی کو فروغ دیا گیا ہے اور یہاں پر کسی بھی قسم کے ترقیاتی کام نہیں کئے گئے ہیں اور صرف عوام کو چھلنے کا کام کیا گیا ہے. بدعنوانی سے نجات دلانے کے لئے ریاست کے عوام کو بی جے پی کی حکومت بنانے کے لئے اپنا کام کرنا ہوگا. ان کا کہنا ہے کہ ریاست کا وزیر اعلی اسٹنگ کرتے ہوئے پکڑا جاتا ہے تو وہ ترقی کیا کریں گے، اس موضوع پر سوچنے کی ضرورت ہے. ان کا کہنا ہے کہ گنگا کو یہاں سے بہتی ہے اور آج بھی وہ گندی دکھائی دے رہی ہے ریاستی حکومت نے اس کی صفائی کے نظام کے لئے کسی بھی قسم کے کوئی کام نہیں کئے گئے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ جس طرح سے گنگا پر مرکزی حکومت کام کر رہی ہے اور اسی طرز پر جلد ہی جمنا ندی میں بھی کام کئے جا رہے ہیں اور مرکزی حکومت اس کے لئے مکمل طور پر پابند عہد ہے. ان کا کہنا ہے کہ مرکز کی مودی حکومت نے کئی فلاحی کام کئے اور جس کا فائدہ عوام کو مل رہا ہے. انہوں نے کہا کہ نوٹبدي سے جہاں ایک طرف لوگوں کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑا لیکن آج عوام مکمل طور پر خوش ہے، مودی حکومت نے نوٹبدي کا بہتر قدم اٹھایا ہے. اس موقع پر سابق وزیر اعلی و ہردوار رہنما ڈاکٹر رمیش پوکھریال نشنک نے کہا کہ ریاست کی کانگریس حکومت مکمل طور پر بدعنوانی میں ملوث رہی ہے. انہوں نے کہا کہ ریاست میں ترقی کی بات کرنے والی کانگریس، عوام کے درمیان پہنچ کر کھوکھلی باتیں کرتی آ رہی ہے. بی جے پی نے اپنے پانچ سال کے دور اقتدار میں جہا انےك عوامی بہبود اور ریاست کی ترقی کے منصوبے شروع کی تھی، وہیں کانگریس نے اپنے 10 سال کے دور اقتدار میں اتراکھنڈ کو برباد ہی کیا. انہوں نے کہا کہ کانگریس نے اپنے دور اقتدار میں نہ صرف ریاست کو قرض کی گرت میں دھکیلا بلکہ قانون کی دھجیاں اڑا کر دیو بھومی کہلانے والے اس پردیش کو مجرموں کی شراستھلي بنا دیا. انہوں نے کہا کہ کانگریس حکومت نے اقتصادی كپربندھن اور مارکیٹ سے قرض لے کر اتراکھنڈ کی زمین پر پیٹ میں پلنے والے بچے کو بھی پیدا ہوتے ہی لاکھوں روپے کا مقروض بنا دیا. انہوں نے کہا کہ کانگریس حکومت نے توڑ اتراکھنڈ پیشانی پر تشویش کی لکیروں کو کھینچ دیا ہے. ان کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں ملک چومكھي ترقی کی طرف گامزن ہو رہا ہے. نریندر مودی اتراکھنڈ کے مناسب ترقی چاہتے ہیں تبھی تو 12 ہزار کروڑ کی لاگت سے بننے والی چاردھام تمام تر اسکیمیں کا سنگ بنیاد کر آل وےدر پروجیکٹ اور شکش سے كرپرياگ تک بھی 16 ہزار کروڑ کی لاگت سے بننے والی ریل کی منظوری دے کر اتراکھنڈ کو ایک اسمريي تحفہ دیا ہے. اس سے ملک اور دنیا کے لوگ محفوظ سفر تيرتھاٹن اور سیاحت کر سکے. یہ قدم اتراکھنڈ کی ترقی کی سمت میں میل کا پتھر ثابت ہوگا. انہوں نے کہا کہ چاہے نمام گنگا منصوبے ہو یا اتراکھنڈ کے لئے درجنوں مرکز امداد کی منصوبہ بندی ہو مرکزی حکومت کوئی کور-کسر نہیں چھوڈنا چاہتی ہے. ان کا کہنا ہے کہ لیکن یہ تبھی ممکن اور ترقی کی سوچ زمین پر احساس ہو گی جب اس ریاست میں شفاف اور اپنا ویژن رکھنے والی مضبوط قوت ارادی کی حکومت ہوگی اور یہ بی جے پی حکومت کے آنے پر ہی ممکن ہوگا. نشنک نے کہا کہ بی جے پی نے اتراکھنڈ کا بالترتیب ترقی کیا جہاں انتظامی بہتری کی نظر سے خدمت کا حق قانون بنایا تھا وہی تقرریاں اور ستھانتر میں شفافیت کیلئے قانون بنایا تھا اور لوک آیکت کی تقرری بھی یقینی بنانے کی سمت میں قدم بڑھا کرپشن اور انيمتاو پر لگام لانے کی مہم شروع کی تھی وہی آج اتراکھنڈ کی کانگریس حکومت تمام اسٹنگ اقساط میں پھسي ہوئی ہے. خود صوبے کے سربراہ ہی اس کی زد میں آئے ہوئے ہے جو نہایت شرمناک اور سوچنيي ہے. اس موقع پر بی جے پی کے کئی کارکن اور عہدیدار موجود تھے.

2 thoughts on “پردیش میں عوام بنا چکی تبدیلی کا دماغ: خواب لڑکی

  • February 13, 2017 at 9:54 am
    Permalink

    Mene suna h ye rekha arya ke programme me nhi gayi.

    Reply
    • February 13, 2017 at 11:37 pm
      Permalink

      ji aapne sahi suna hai

      Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *