موت کی گولی سے بچ کر اللہ نے مجھے دوسری زندگی دی، سابق وزیراعظم عمران خان

وزیر آباد میں پاکستان تحریک انصاف کے جلسے کے دوران گولی لگنے کے ایک دن بعد سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اللہ نے انہیں دوسری زندگی دی ہے۔ جمعرات کو ہونے والے حملے کے بعد ان کی کیمرے پر یہ پہلی نمائش تھی۔ عمران خان کو ریلی میں گولی لگنے کے بعد اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ اے آر وائی نیوز کے مطابق عمران خان کو دونوں ٹانگوں میں متعدد گولیاں لگی ہیں۔ واقعے کے بعد انہیں فوری طور پر لاہور کے اسپتال لے جایا گیا۔ پاکستانی چینلز کی جانب سے دکھائی جانے والی ویڈیو میں زخمی عمران خان کو ہسپتال کے بستر پر لیٹا دیکھا گیا، ان کی دائیں ٹانگ پر چوٹ لگی ہے۔ اس کی آنکھیں کھلی ہوئی تھیں اور اسے بڑبڑاتے ہوئے دیکھا جا سکتا تھا۔ ذرائع نے بتایا کہ اس نے اس صورتحال کو اپنا اوتار سمجھا، جو خدا نے دیا تھا۔ شوکت خانم ہسپتال کے ڈاکٹر فیصل سلطان کا کہنا تھا کہ ’عمران خان کی حالت مستحکم ہے، گولیوں کے ٹکڑے رہ گئے ہیں، انہیں آپریشن تھیٹر لے جایا گیا ہے۔ گولی نے اس کی ٹیبیا کی ایک ہڈی کو کاٹ دیا۔ ڈاکٹر بعد میں تفصیلی بیان دیں گے۔ جمعرات کی شام، کرکٹر سے سیاست دان بنے ہزاروں کے قافلے کی قیادت جمعہ سے لاہور سے دارالحکومت اسلام آباد کی طرف کر رہے تھے، جو رواں سال اپریل میں عدم اعتماد کے ووٹ کے ذریعے عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد نئے انتخابات کا مطالبہ کر رہے تھے، اسی دوران انہیں گولی مار دی گئی۔ ٹانگ میں حملے میں خان کا ایک حامی ہلاک جبکہ عمران خان سمیت نو افراد زخمی ہوئے۔