ریاستی یوم تاسیس کے موقع پر وزیر اعلیٰ نے ریاست کے عوام کو مبارکباد اور مبارکباد دی۔

وزیر اعلیٰ پشکر سنگھ دھامی نے ریاست کے یوم تاسیس پر ریاست کے لوگوں کو مبارکباد اور مبارکباد دی ہے۔ ملک کے لیے عظیم قربانی دینے والے تمام لازوال شہیدوں، مشتعل افراد اور بہادر سپاہیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے ریاست میں حالیہ آفت میں اپنی جانیں گنوانے والے لوگوں کے تئیں تعزیت کا اظہار بھی کیا۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ نے ریاست کے عوام کی طرف سے بھارت رتن شری اٹل وہاری واجپائی، سابق وزیر اعظم بھارت رتن شری اٹل وہاری واجپائی کو بھی جھکایا جنہوں نے صنعتی اتراکھنڈ کی تشکیل کے ساتھ ساتھ صنعتی اتراکھنڈ کی مضبوط بنیاد رکھی۔ ریاست. وزیر اعلیٰ پشکر سنگھ دھامی نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ریاست کے عظیم لوگوں کے آشیرواد، حکومت کی مضبوط قوت ارادی، وزیر اعظم نریندر مودی کی اتراکھنڈ کے تئیں خصوصی لگاؤ ​​اور مرکزی حکومت کے تعاون سے اتراکھنڈ تیزی سے ترقی کی طرف بڑھ رہا ہے۔ ترقی ہے. وزیر اعلیٰ نے کہا کہ وزیر اعظم جناب نریندر مودی کو دیو بھومی اتراکھنڈ اور اتراکھنڈ کے لوگوں کے ساتھ روحانی لگاؤ ​​ہے، آج کیدارناتھ دھام اور بدری ناتھ دھام میں ترقیاتی کام ہو رہے ہیں۔ ہمارا چاردھام نہ صرف ہمارے عقیدے اور تعظیم کا مرکز ہے بلکہ ہماری معیشت کی بنیاد بھی ہے۔ اس سال 45 لاکھ سے زیادہ عقیدت مند چاردھام اور ہیم کنڈ صاحب کے درشن کرنے آئے۔ یہ تعداد کورونا کے دور سے پہلے کے مقابلے میں 35 فیصد زیادہ ہے۔ وزیر اعظم کی رہنمائی میں ریاست میں ملٹی ماڈل کنیکٹیویٹی پر بے مثال کام کیا گیا ہے۔ اس کا اثر آنے والے وقت میں ریاست کی سماجی اور اقتصادی ترقی کی صورت میں نظر آئے گا۔ ریاست میں سڑکوں کی تعمیر کا کام تیز رفتاری سے ہو رہا ہے، اس کے لیے مرکزی سڑک ٹرانسپورٹ وزارت کی طرف سے مکمل تعاون دیا جا رہا ہے۔ ردر پور اور رام پور مرادآباد بائی پاس کی تعمیر سے ریاست کے کماؤن خطہ میں ترقی کی نئی جہتیں قائم ہوں گی۔ اور ٹانک پور-باگیشور اور ڈوئی والا سے گنگوتری-یمونوتری ریل لائن کے سروے پر مرکزی حکومت نے اتفاق کیا ہے۔ آج ہم نے ہوائی رابطہ کے میدان میں ایک طویل سفر طے کیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ 21 اکتوبر کو وزیر اعظم جناب نریندر مودی نے ہم وطنوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے مقامات کے سفر پر جو رقم خرچ کرتے ہیں اس کا کم از کم 5 فیصد خرچ کریں۔ ہماری ریاست میں ہر سال کروڑوں لوگ سیاحت اور زیارت کے لیے آتے ہیں۔ ان کی خریدی ہوئی مقامی مصنوعات ہمارے لوگوں کی معیشت کو مضبوط کرنے کے ساتھ ساتھ ملک و دنیا میں اپنی شناخت بنائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ رانی باغ (نینیتال) میں ایچ ایم ٹی۔ اتراکھنڈ کو 45.33 ایکڑ اراضی ملنا ریاست کے لیے ڈبل انجن حکومت کا ایک اور بڑا تحفہ ہے۔ اس سے ریاست میں صنعتی ترقی کو مزید تقویت ملے گی اور ہمارے نوجوان روزگار اور خود روزگار سے جڑ سکیں گے، اتراکھنڈ کے نوجوان ہمارا مستقبل ہیں۔ اس لیے ہم نے نوجوانوں کو دھوکہ دینے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی ہے۔ بھرتیوں میں گھپلوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جا رہی ہے۔ شفافیت اور بروقت امتحانات کے انعقاد کے لیے، ہم نے بھرتیوں کو اتراکھنڈ ماتحت کمیشن سے ریاستی پبلک سروس کمیشن میں منتقل کر دیا ہے۔ اس وقت جاری کردہ بھرتی کیلنڈر کے مطابق 7 ہزار آسامیوں پر بھرتی کا عمل جاری ہے۔ ریاست میں کھیلوں اور کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کے لیے ہماری حکومت نے ایک نئی اسپورٹس پالیسی لائی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ 8 سے 14 سال کے ابھرتے ہوئے کھلاڑیوں کو 1500 روپے ماہانہ کا اسپورٹس اسکالرشپ بھی ’’مکھیا منتری اُدیمان کھلاڑی اُنائن یوجنا‘‘ کے تحت دیا جا رہا ہے۔ اسکولی تعلیم اور اعلیٰ تعلیم میں نئی ​​قومی تعلیمی پالیسی متعارف کرانے میں اتراکھنڈ ملک کی سرکردہ ریاستوں میں سے ایک ہے۔ آیوشمان اتراکھنڈ یوجنا کے تحت ریاست کے تمام خاندانوں کو سالانہ 5 لاکھ روپے تک کا مفت علاج فراہم کیا جا رہا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہماری حکومت خدمت، گڈ گورننس، حساسیت اور غریبوں کی فلاح و بہبود کے منتر پر چل رہی ہے۔ بلاک سطح سے لے کر وزیر اعلیٰ سطح تک عوامی مسائل سنے جا رہے ہیں۔ مسائل کے فوری حل پر زور دیا گیا ہے۔ ہماری حکومت سادگی، حل حل اور اطمینان کے منتر پر کام کر رہی ہے، تاکہ لوگوں کو اسکیموں کا صحیح فائدہ مل سکے اور ان کے مسائل حل ہوں۔ بدعنوانی کو روکنے کے لیے کرپشن فری ایپ 1064 کا آغاز کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اتراکھنڈ نہ صرف دیو بھومی ہے بلکہ ویر بھومی بھی ہے اور فوجیوں اور ان کے خاندانوں کا احترام کرنا ہمارا فرض ہے۔ اسی کو مدنظر رکھتے ہوئے دہرادون میں ایک عظیم الشان فوجی مزار کے قیام پر تیزی سے کام کیا جا رہا ہے۔ ریاست اتراکھنڈ کے بہادری کے تمغے جیتنے والوں کو دی جانے والی ایک بار کی گرانٹ میں بھی اضافہ کیا گیا ہے۔ ہم ہیم پرہاری یوجنا پر بھی کام کر رہے ہیں۔ اس کے تحت ریاست کے سابق فوجیوں اور نوجوانوں کو بین الاقوامی سرحدوں سے متصل اضلاع میں آباد ہونے کے لیے تمام ضروری مدد فراہم کی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ وزیر اعظم جناب مودی کا یہ بیان کہ ’’21ویں صدی کی تیسری دہائی اتراکھنڈ کی دہائی ہوگی‘‘۔ ہم پر وزیر اعظم کا یہ بھروسہ ہر اتراکھنڈی کا اعزاز ہے۔ جہاں ایک طرف ہمیں اپنی ریاست پر فخر ہے وہیں دوسری طرف ہم بڑی ذمہ داریاں بھی محسوس کرتے ہیں۔ ہماری حکومت نے 2025 تک ریاست کو ہر میدان میں ایک سرکردہ ریاست بنانے کے لیے عدم انتخاب کی قرارداد کو اپنایا ہے۔