ایف اے ٹی ایف میٹنگ میں پاکستان کی کلاس کو سرمئی فہرست سے باہر ہونا مشکل ہوگا؟

نئی دہلی اگلے ماہ پیرس میں ہونے والی ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں اس بات پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا جائے گا کہ کیا پاکستان نے انسداد دہشت گردی کی عالمی مانیٹرنگ ایجنسی کے تجویز کردہ ایکشن پلان پر عمل کیا ہے۔ یہ معلومات فرانسیسی سفارتی ذرائع نے جمعہ کو دی۔ انہوں نے کہا کہ فرانس منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی اعانت کے خلاف جنگ جاری رکھنے کا پابند ہے اور دہشت گردی کی روک تھام میں پاکستان کے اقدامات کا اندازہ کرنے سے گریزاں رہے گا۔ اگلے ماہ پیرس میں ہونے والی ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں اس بات پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا جائے گا کہ کیا پاکستان نے انسداد دہشت گردی کی عالمی مانیٹرنگ ایجنسی کے تجویز کردہ ایکشن پلان پر عمل کیا ہے۔
ایسے اشارے ملے تھے کہ بدھ کے روز بیجنگ میں ایف اے ٹی ایف کے ایشیاء پیسیفک باب اجلاس کے دوران چین کی حمایت اور کچھ مغربی ممالک کی اسٹریٹجک حمایت حاصل کرنے کے بعد پاکستان کو ‘مشتبہ فہرست’ سے باہر چھوڑ دیا جاسکتا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ بیجنگ اجلاس میں تکنیکی صورتحال کے پیش نظر پاکستان کی صورتحال کا تجزیہ کیا گیا۔ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) نے پاکستان کو اس کے زیرزمین زیرانتظام دہشت گردوں کے نیٹ ورک کو موثر انداز میں روکنے کے لئے ایک وقتی ایکشن پلان کی تجویز پیش کی تھی۔ اس سلسلے میں ایک رپورٹ فروری میں پیرس میں ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں پیش کی جائے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *